ایرانی القدس کے بدنام زمانہ دھشتگر پاسدار مدتوں سے بلوچ نوجوانوں کے قتل میں مصروف ھیں

MUST READ

خصومتِ دولتِ ایران با زبان بلوچـی و دلایلِ آن

خصومتِ دولتِ ایران با زبان بلوچـی و دلایلِ آن

جنگ عــرب و عجم

جنگ عــرب و عجم

انڈیا سمینار میں حیربیار مری کا خصوصی پیغام

انڈیا سمینار میں حیربیار مری کا خصوصی پیغام

زاھدان میں سراوان کے بلوچ قتل عام کے خلاف مکمل  شٹر ڈاؤن

زاھدان میں سراوان کے بلوچ قتل عام کے خلاف مکمل شٹر ڈاؤن

حمید صمصام نمونه بارز یک فاشیست ملی ـ مذهبی

حمید صمصام نمونه بارز یک فاشیست ملی ـ مذهبی

بيست و هفتم مارس  روزی سياه در تاريــخ بلوچستــــان

بيست و هفتم مارس روزی سياه در تاريــخ بلوچستــــان

بلوچستــــانءِ هیروشیمـــا

بلوچستــــانءِ هیروشیمـــا

حامد بھائی تینوں رب دیاں رکھاں (یہ عنوان میں نے جناب ڈاکٹر صفدر محمودصاحب کے کالم سے مستعار لی ہے) کردگار بلوچ

حامد بھائی تینوں رب دیاں رکھاں (یہ عنوان میں نے جناب ڈاکٹر صفدر محمودصاحب کے کالم سے مستعار لی ہے) کردگار بلوچ

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران – قسمت پنجم

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران – قسمت پنجم

گپ ءُ ترانے گون شهید غلام محمد بلوچ 28 اپریل 2008

گپ ءُ ترانے گون شهید غلام محمد بلوچ 28 اپریل 2008

بلوچ ورنایانی کشت ءُ کوش تروریستی سپاه ءِ کارانت

بلوچ ورنایانی کشت ءُ کوش تروریستی سپاه ءِ کارانت

زگری پہلے بلوچ ہیں اور سرزمین بلوچستان کے وارث ہیں – حاجی ایوب سربازی

زگری پہلے بلوچ ہیں اور سرزمین بلوچستان کے وارث ہیں – حاجی ایوب سربازی

(حربه های ضدبشری فاشيسم تماميت خواه پارس در بلوچستان اشغالی (قسمـت دوم

(حربه های ضدبشری فاشيسم تماميت خواه پارس در بلوچستان اشغالی (قسمـت دوم

بيست و هفتم مارس روزی سياه در تاريــخ بلوچستــــان

بيست و هفتم مارس روزی سياه در تاريــخ بلوچستــــان

ماہِ اپریل میں آپریشن دوران 120 سے زائد افراد لاپتہ، 24قتل کئے گئے، بی بی گل بلوچ

ماہِ اپریل میں آپریشن دوران 120 سے زائد افراد لاپتہ، 24قتل کئے گئے، بی بی گل بلوچ

ایرانی القدس کے بدنام زمانہ دھشتگر پاسدار مدتوں سے بلوچ نوجوانوں کے قتل میں مصروف ھیں

2021-02-26 18:52:24
Share on

ایرانی القدس پاسدران کو ملّا خامنئی کی جانب سے بلوچستان کے سرحدی علاقوں کی دفاعی ذمہ داری ۲۰۱۵ سے سونپی گئی ھے، ان کو بلوچستان میں بلوچوں کو ھر نظر سے گریبان گیر کرنے کی کھلی چھوٹ دیگئی ھے انکے فرائضوں میں بلوچوں کے آجدادی زمینوں پر قبضے ،ساحلی علاقوں میں نئے شھر بسانے جس میں آبادکار گجر کو کئی میلونوں کے حساب سے آباد کرانا تاکہ بلوچوں کے انکے گلزمین میں اقلیت میں تبدیل کیا جائے، بلوچوں کے تمام ساحلی علاقوں کو قبضہ کرنا اور انھیں اپنے عزیز سوآقابروں کے نام لیز کرنا، معاشی بدحالی اور تمام سرکاری دفاتروں میں آباد کروں کو نوکری دینا  اور نجی کمپنیوں کو آبادکاروںکے نام الاٹ کرنا اور انھیں معاشی گارنٹی دینا، منشیات کو بلوچ علاقوں میں پھیلانا اور روزگار کے تمام ذرائعوں کو بلوچ نوجوانوں کے لئے بند کرنا، بلوچ نوجوانوں اور معتمدوں اپنے مخبر بنانا تاکہ اپنے مادر وطن کی بدحالی اور قبضہ گیریت میں معاونت کریں.
بلوچستان میں قبائلیوں کے درمیان اسلحہ کی مفت تقسیم تاکہ بلوچ قبائل ایک دوسرے سے چپقلش اور برادر کشی کرتےرھے. خامنئی کے بدنام زمانہ پاسدارن عرصوں سے بلوچوں کے قتل عام میں ملوث رھے ھیں تاکہ بلوچوں کی نسل کشی کیجاسکے اور بلوچ نوجوانوں کے قتل کوئی بھی حکومتی ادارہ جواب گو نھیں ھوتا. جس تصویر کو آپ مشاہدہ کڑھے وہ انھی بدنام زمانہ پاسداران کی بلوچوں کے خلاف سفاکیت کی نشاندھی ھے. یہ پاسداران ان سرحدی علاقوں میں تعینات جھاں بلوچ 
دو وقت روٹی پیدا کرنے کے تیل کا کاروبار کرتے ھیں یہ سفاک انھیں گولیاں کا نشانہ بنا کر انھیں جانوروں کی طرح گاڑیوں میں ڈال کر ویرانوں میں پھینک دیتے تاکہ یہ قاتل مبرا ھوسکے. اس تصویر میں پاسداروں نے چند بلوچ کو موت کے گھاٹ اتار کر انکی جسدوں کو ویرانوں میں پھینکے سے پہلے تصویر کننھچی اور اس نے اسے اپنے انسٹاگرام میں پوسٹ کرکے اپنے بربریت پر نازاں ھے، کیونکہ انھیں بلوچوں کے قتل عام کی جمھوری اسلامی ایران کی طرف سے کھلی چھوٹ ھے.

Share on
Previous article

زاھدان میں سراوان کے بلوچ قتل عام کے خلاف مکمل شٹر ڈاؤن

NEXT article

بلکتا مغربی بلوچستان

LEAVE A REPLY