ایک آزاد سیکولر اورجمہوری ریاست بلوچستان خطےکے امن و ترقی ودنیا میں دہشتگردی کےخاتمے کیلئے لالزمی ہوچکا ہے – بی جی پی کےترجمان انیل بالونی

MUST READ

شماری ازترفنـدهای اشغالگـران برای حفظ خط مرزی ژنرال ” گـُلد سميـت “

شماری ازترفنـدهای اشغالگـران برای حفظ خط مرزی ژنرال ” گـُلد سميـت “

لَدیگی سپاہ قدس ماں اسکاندیناوی ءَ

لَدیگی سپاہ قدس ماں اسکاندیناوی ءَ

از شیخ خزعل تا شهید احمد نیسی

از شیخ خزعل تا شهید احمد نیسی

ھَشر ءُ کمک کاری گرانبھائیں بلوچی دود اَنت

ھَشر ءُ کمک کاری گرانبھائیں بلوچی دود اَنت

بیست ءُ یک فروری ماتی زبانانی میان اُستمانی روچءِ بابتءَ گپ وترانے گون پروفیسرصبوربلوچءَ

بیست ءُ یک فروری ماتی زبانانی میان اُستمانی روچءِ بابتءَ گپ وترانے گون پروفیسرصبوربلوچءَ

کراچی پر یس کلب کے سامنے بلوچ ہیومن رائٹس آرگنائزیشن کا احتجاجی مظاہرہ

کراچی پر یس کلب کے سامنے بلوچ ہیومن رائٹس آرگنائزیشن کا احتجاجی مظاہرہ

اِویــن” ءِ نوک ورنائیــں بندیـگ” – محمد کريم بلــوچ

اِویــن” ءِ نوک ورنائیــں بندیـگ” – محمد کريم بلــوچ

بلــوچ هُـــژّار

بلــوچ هُـــژّار

حادثے میں لانگ مارچ میں شریک دو افراد زخمی

حادثے میں لانگ مارچ میں شریک دو افراد زخمی

Two Baloch killed in Mastung as FC given free hand to conduct operations in Balochistan

Two Baloch killed in Mastung as FC given free hand to conduct operations in Balochistan

من ءُ تو همراہ نہ ایں – حفیظ روف

من ءُ تو همراہ نہ ایں – حفیظ روف

پاکستانی قبضے کے خلاف یورپ سمیت دیگر ممالک میں آگاہی مہم چلائیں گے : حیربیارمری

پاکستانی قبضے کے خلاف یورپ سمیت دیگر ممالک میں آگاہی مہم چلائیں گے : حیربیارمری

گوانڈین ریڈیو رپورٹءِ چا تمپءَ

گوانڈین ریڈیو رپورٹءِ چا تمپءَ

نہ چاہتے ہوئے بھی – کردگار بلوچ

نہ چاہتے ہوئے بھی – کردگار بلوچ

هر کار په بود ءُ هِمّت انت

هر کار په بود ءُ هِمّت انت

ایک آزاد سیکولر اورجمہوری ریاست بلوچستان خطےکے امن و ترقی ودنیا میں دہشتگردی کےخاتمے کیلئے لالزمی ہوچکا ہے – بی جی پی کےترجمان انیل بالونی

2020-03-25 22:49:22
Share on

سویڈن / ریڈیو گوانک / پاکستان ایک  ظالم اور انسانی حقوق کا مجرم ملک ہے جو بلوچوں پر اُس کے قبضے سے لیکر آج تک برابر زیادتیاں کررہا ہے۔ایک طرف وہ بلوچوں کے قومی وسائل لوٹ کراپنی زندگی برقرقار رکھے ہوئے ہے دوسری طرف بلوچوں کو صفحہ ہستی سے مٹانے کے گھناونے منصوبے پرکاربند ہے۔پوری مہذب دنیا کی یہ خواہش ہوگی کہ بلوچ پاکستانی بربریت کا منہ تهوڑ جواب دیکر ان کی ظلم کے سامنے سینہ سپر رہیں کیونکہ پاکستان ہرایک ظالم ریاست کی طرح اپنے منطقی انجام بربادی کی طرف رواں دواں ہے۔ وہ اپنے داخلی انتشار،ڈبل اسٹنڈرڈ پالیسیوں اور بلوچ تحریک آزادی کی وجہ سے اندر سےٹوٹ پھوٹ کا شکارہوکر اب بے سکت هوچکا هے۔ان خیالات کا اظہار بی جی پی کےترجمان انیل بالونی نےریڈیو گوانک سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔اُنھوں نے کہاکہ پاکستان مصنوعی سانسیں لیکراپنی وجود برقرار رکھے ہوئے ہے وہ جهوٹ کے سہارے زنده هے۔بلوچستان کے ممکنہ آزادی پر اظہار خیال کرتے ہوئے بی جی پی کے ترجمان نے کہ اب بلوچستان کی آزادی  خواب نہیں ایک حقیفت هے جسے روکنا پاکستانی بگهوڑوں کے بس سے باهر هوچکا هے۔اُنھوں نے یقیقن دلایا کہ هم انڈین اور همارا بچہ بچہ بلوچ آزادی کے تحریک کے ساتھ هے هم سب کو ایک ساتھ ملکر بلوچ تحریک آزادی کی جنگ لڑنی هوگی کیونکہ آزاد بلوچستان نہ صرف بلوچوں کے وجود کا مسلہ بن کر اُنکی ضرورت ہے بلکہ یہ ہماری اورپوری دنیا کے اُمنگوں کے عین مطابق ہے۔ایک آزاد سیکولر اورجمہوری ریاست بلوچستان خطےکے امن و ترقی ودنیا میں دہشتگردی کےخاتمے کیلئے لالزمی ہوچکا ہے۔آخرمیں اُنھوں نے اس بات پر زور دیا کہ بلوچ قیادت وقت و حالات کے تقاضوں کو بہترمحسوس کرکے مشترک و متحد جد وجہد کی راہیں تلاش کریں تاکہ اُنھیں دنیا کی حمایت حاصل کرنے میں آسانی ہو اور وہ اپنی رنجیدہ قوم کو جلدازجلد آزادی دلاسکیں۔

Share on
Previous article

بلوچستان کو پاکستانی فوج نے بلوچ قوم کے لیے نوگو ایریا بنادیا ہے : حیر بیار مری

NEXT article

بلــــوچ گلزميــــن ءِ انــــداز ءُ سيمســـــراں

LEAVE A REPLY