ایک آزاد سیکولر اورجمہوری ریاست بلوچستان خطےکے امن و ترقی ودنیا میں دہشتگردی کےخاتمے کیلئے لالزمی ہوچکا ہے – بی جی پی کےترجمان انیل بالونی

MUST READ

کراچی کے بلوچ پاکستانی سیاست کی فریب سے خود کو آزاد کریں :حیربیار مری

کراچی کے بلوچ پاکستانی سیاست کی فریب سے خود کو آزاد کریں :حیربیار مری

بالاچ راجءِ دپتران مدام زندگ انت

بالاچ راجءِ دپتران مدام زندگ انت

گپے گـوں ناشریں امینی فـرد

گپے گـوں ناشریں امینی فـرد

استقلال کوردستان مبارک باد

استقلال کوردستان مبارک باد

بهر شکل ممکن ازهویت ملی و سرزمین مان بلوچستان دفاع کنیم

بهر شکل ممکن ازهویت ملی و سرزمین مان بلوچستان دفاع کنیم

طرح تقسيـم بلوچستـان محکوم به شکست است

طرح تقسيـم بلوچستـان محکوم به شکست است

بلوچستان میں ریفرینڈم نہیں چاہتے: حیر بیار مری

بلوچستان میں ریفرینڈم نہیں چاہتے: حیر بیار مری

بلوچستان سمینار اسٹوکھولم سویڈنءَ بلوچ دانشور واجہ شبیر بلوچءِ تران

بلوچستان سمینار اسٹوکھولم سویڈنءَ بلوچ دانشور واجہ شبیر بلوچءِ تران

قمبرچاکرءُ الیاس نزر شما نمیران ایت

قمبرچاکرءُ الیاس نزر شما نمیران ایت

شھید حمید بلوچءِ پیغامءِ چا مچ جیلءَ – توار سرمچار وبلاگ

شھید حمید بلوچءِ پیغامءِ چا مچ جیلءَ – توار سرمچار وبلاگ

دَرآمدیں گُشتاسبی کئے اِنت؟

دَرآمدیں گُشتاسبی کئے اِنت؟

شهید فدا احمد پارلیمانی سیاست کنوکانی شازش هانی آماچ بوت – گپ و ترانے گون بلوچ سیاسی جهدکاران شهید فدا احمدءِ بابتءَ

شهید فدا احمد پارلیمانی سیاست کنوکانی شازش هانی آماچ بوت – گپ و ترانے گون بلوچ سیاسی جهدکاران شهید فدا احمدءِ بابتءَ

اساتذہ و سرکاری ملازمین مردم شماری میں حصہ لینے سے گریز کریں،سخت حملے کریں گے، بی ایل ایف

اساتذہ و سرکاری ملازمین مردم شماری میں حصہ لینے سے گریز کریں،سخت حملے کریں گے، بی ایل ایف

جیش العدل کے کمانڈر ایوب بلوچ سے گفتگو

جیش العدل کے کمانڈر ایوب بلوچ سے گفتگو

واجہ شھید پروفیسر صبا دشیاريءِ 26 اگست 2009ءَ بلوچستان لیبریش چارٹر ءُ آھيءِ رھدربريءِ بابتءَ تران

واجہ شھید پروفیسر صبا دشیاريءِ 26 اگست 2009ءَ بلوچستان لیبریش چارٹر ءُ آھيءِ رھدربريءِ بابتءَ تران

ایک آزاد سیکولر اورجمہوری ریاست بلوچستان خطےکے امن و ترقی ودنیا میں دہشتگردی کےخاتمے کیلئے لالزمی ہوچکا ہے – بی جی پی کےترجمان انیل بالونی

2020-03-25 22:49:22
Share on

سویڈن / ریڈیو گوانک / پاکستان ایک  ظالم اور انسانی حقوق کا مجرم ملک ہے جو بلوچوں پر اُس کے قبضے سے لیکر آج تک برابر زیادتیاں کررہا ہے۔ایک طرف وہ بلوچوں کے قومی وسائل لوٹ کراپنی زندگی برقرقار رکھے ہوئے ہے دوسری طرف بلوچوں کو صفحہ ہستی سے مٹانے کے گھناونے منصوبے پرکاربند ہے۔پوری مہذب دنیا کی یہ خواہش ہوگی کہ بلوچ پاکستانی بربریت کا منہ تهوڑ جواب دیکر ان کی ظلم کے سامنے سینہ سپر رہیں کیونکہ پاکستان ہرایک ظالم ریاست کی طرح اپنے منطقی انجام بربادی کی طرف رواں دواں ہے۔ وہ اپنے داخلی انتشار،ڈبل اسٹنڈرڈ پالیسیوں اور بلوچ تحریک آزادی کی وجہ سے اندر سےٹوٹ پھوٹ کا شکارہوکر اب بے سکت هوچکا هے۔ان خیالات کا اظہار بی جی پی کےترجمان انیل بالونی نےریڈیو گوانک سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔اُنھوں نے کہاکہ پاکستان مصنوعی سانسیں لیکراپنی وجود برقرار رکھے ہوئے ہے وہ جهوٹ کے سہارے زنده هے۔بلوچستان کے ممکنہ آزادی پر اظہار خیال کرتے ہوئے بی جی پی کے ترجمان نے کہ اب بلوچستان کی آزادی  خواب نہیں ایک حقیفت هے جسے روکنا پاکستانی بگهوڑوں کے بس سے باهر هوچکا هے۔اُنھوں نے یقیقن دلایا کہ هم انڈین اور همارا بچہ بچہ بلوچ آزادی کے تحریک کے ساتھ هے هم سب کو ایک ساتھ ملکر بلوچ تحریک آزادی کی جنگ لڑنی هوگی کیونکہ آزاد بلوچستان نہ صرف بلوچوں کے وجود کا مسلہ بن کر اُنکی ضرورت ہے بلکہ یہ ہماری اورپوری دنیا کے اُمنگوں کے عین مطابق ہے۔ایک آزاد سیکولر اورجمہوری ریاست بلوچستان خطےکے امن و ترقی ودنیا میں دہشتگردی کےخاتمے کیلئے لالزمی ہوچکا ہے۔آخرمیں اُنھوں نے اس بات پر زور دیا کہ بلوچ قیادت وقت و حالات کے تقاضوں کو بہترمحسوس کرکے مشترک و متحد جد وجہد کی راہیں تلاش کریں تاکہ اُنھیں دنیا کی حمایت حاصل کرنے میں آسانی ہو اور وہ اپنی رنجیدہ قوم کو جلدازجلد آزادی دلاسکیں۔

Share on
Previous article

بلوچستان کو پاکستانی فوج نے بلوچ قوم کے لیے نوگو ایریا بنادیا ہے : حیر بیار مری

NEXT article

بلــــوچ گلزميــــن ءِ انــــداز ءُ سيمســـــراں

LEAVE A REPLY