بلوچستان میں انسانی حقوق کی پامالیوں کے خلاف برطانیہ اور یورپی ممالک میں2 ماہی آگاہی مہم چلانے کا فیصلہ۔

MUST READ

ڈھاکہ سے شاہ باغ مومنٹ کے کارکن شکیل سے گفتگو

ڈھاکہ سے شاہ باغ مومنٹ کے کارکن شکیل سے گفتگو

طرح توسعه سواحل مکران – پندلے په بلوچستـــان ءِ مدامی زوربرد کنگ ءَ – گـُـڈّی (آهری) بهر

طرح توسعه سواحل مکران – پندلے په بلوچستـــان ءِ مدامی زوربرد کنگ ءَ – گـُـڈّی (آهری) بهر

بر دانش آموزان بلـوچ چه می گـذرد؟ بخش آخـر

بر دانش آموزان بلـوچ چه می گـذرد؟ بخش آخـر

بلوچستان کی آذادی کے علاوہ کسی اور نقطے پر پاکستان سے کسی قسم کے مزاکرات نہیں ہوسکتے۔ نوابزادہ حیر بیار مری

بلوچستان کی آذادی کے علاوہ کسی اور نقطے پر پاکستان سے کسی قسم کے مزاکرات نہیں ہوسکتے۔ نوابزادہ حیر بیار مری

رحمت آبادِ یزد و بیدخونِ عسلویه مایه شرم بشریت هستند

رحمت آبادِ یزد و بیدخونِ عسلویه مایه شرم بشریت هستند

گلزمین ءِ تلاهیں کوه ءُ نوکیں ٹیل ءُ گیسءِ مــأدن

گلزمین ءِ تلاهیں کوه ءُ نوکیں ٹیل ءُ گیسءِ مــأدن

نامه جمعی از علمای اهل سنت که خواستار اعزام هئیت تحقیق در مورد ترورعلمای اهل سنت درایران هستند

نامه جمعی از علمای اهل سنت که خواستار اعزام هئیت تحقیق در مورد ترورعلمای اهل سنت درایران هستند

رحمت آبادِ یزد و بیدخونِ عسلویه مایه شرم بشریت هستند

رحمت آبادِ یزد و بیدخونِ عسلویه مایه شرم بشریت هستند

گپ و ترانے گون بلوچ ہیومن رائٹس آرگنائزیشنءِ سروک بانک بی بی گلءَ بلوچستانءَ پاکستانی فوجی آپریشنءِ بابتءَ

گپ و ترانے گون بلوچ ہیومن رائٹس آرگنائزیشنءِ سروک بانک بی بی گلءَ بلوچستانءَ پاکستانی فوجی آپریشنءِ بابتءَ

آزادی پسند تنظیموں کی اتحاد

آزادی پسند تنظیموں کی اتحاد

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران

مکران آپریشنوں کے پیچھے اصل محرک پاکستان وچین معاہدات ہیں،حیر بیار مری

مکران آپریشنوں کے پیچھے اصل محرک پاکستان وچین معاہدات ہیں،حیر بیار مری

تجاربی خونین از مذاکرات با اشغالگران

تجاربی خونین از مذاکرات با اشغالگران

شهید کمبر چاکر

شهید کمبر چاکر

سلمان میایی را بی گناه پرپر کردند – علی میایی جدگال

سلمان میایی را بی گناه پرپر کردند – علی میایی جدگال

بلوچستان میں انسانی حقوق کی پامالیوں کے خلاف برطانیہ اور یورپی ممالک میں2 ماہی آگاہی مہم چلانے کا فیصلہ۔

2020-03-27 11:11:34
Share on

بلوچستان میں انسانی حقوق کی پامالیوں کے خلاف برطانیہ اور یورپی ممالک میں2 ماہی آگاہی مہم چلانے کا فیصلہ۔

انٹرنیشنل وائس فار بلوچ میسنگ پرسن

لندن(پ ر) لندن میں انٹرنیشنل وائس فار بلوچ مسنگ پرسنز اورانٹرنیشنل کمیٹی اگینسٹ ڈساپیرینسیز کا ایک اجلاس نارتھ لندن کردش کمیونٹی سنٹر میں منعقد ہوا. اجلاس میں آی وی بی ام پی کی جانب سے فیض بلوچ اور حکیم واڈیلہ بلوچ نے کی شرکت. اجلاس میں بلوچستان میں ایران اور پاکستان کی جانب سے جاری انسانی حقوق کی پامالیوں کے خلاف دو ماہی آگاہی مہم چلانے کا فیصلہ کیا گیا. اجلاس میں٢٧ مارچ لندن میں بلوچستان پر قبضہ کے حوالے سے جلسہ جبکہ ۳۰ مارچ کے دن بلوچستان پر پاکستانی جبری الحاق سمیت پاکستان اور ایران کے ھاتھوں اغوا ہونے والے بلوچوں اوربلوچ شہدا کے لواحقین سے اظہار یکجہتی کے لئے لندن میں پاکستانی سفارتخانے سے برطانیہ کے وزیر اعظم کی سرکاری رہایش گاہ تک ایک ریلی نکالنے کا فیصلہ کیا گیا. لوگوں کو بلوچستان کی موجودہ صورت حال اور انسانی حقوق کی پامالی کے بارے آگاہی دینے کےلئے لندن اور یورپ میں کانفرنس جلسے اور کنفرنسیز کا اہتمام کیا جاۓ گا.

. فیض بلوچ نے آئی سی اے ڈی کے رہنماؤں کو آگاہ کیا کہ بلوچستان میں گزشتہ ۱۰ سالوں میں تقریبا ۱۴۰۰۰ لوگوں کو پاکستانی فورسز نے اغواکرلیا ہے. جون ٢٠١٠ سے جنوری ۲۰۱۳ تک ٦٠٠ سے زائد اغوا شدہ لوگوں کی مسخ شدہ لاشیں بلوچستان اور پاکستان کے مختلف شہروں سے ملی ہیں. جنوری ۲۰۱۳ میں تقریباﹰ ۴۰ لوگوں کے اغوا اور ۱۳ لوگوں کی مسخ شدہ لاشیں ملی ھیں.

دوسری جانب ایرانی مقبوضہ بلوچستان میں ۵ بیگناہ بلوچوں کو پھانسی دی گئ ہے جبکہ مزید بلوچ قیدیوں کو ایرانی زندانوں میں پھانسی ہونے کا خطرہ ہے . انھوں نے مزید کہا کہ عالمی انسانی حقوق کے اداروں سمیت جمہوری دنیا کی بلوچستان میں ہونے والی انسانی حقوق کی پامالیوں پر خاموشی لمحہ فکریہ ہے. فیض بلوچ نے عالمی ادروں سے اپیل کی بلوچستان میں بڑھتی ہوئی انسانی حقوق کی پامالیوں کا نوٹس لے کر پاکستان اور ایران کو انٹرنیشنل کورٹ آف جسٹس میں عالمی جنگی جرائم کا مرتکب ٹہرا ئیں . فیض بلوچ نے آخر میں IVBMP کی جانب سے ICAD کے آگاہی کے مہم چلانے کے فیصلے کو سراہتے ہوئے انھیں بھرپور مدد کی یقین دہانی کی ہے.

ICAD کے نمایندہ مسٹر گیوکن نے بلوچستان کے حالات پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوے کہا آیکیڈ بلوچستان میں جبری گمشدگیوں اور دیگر انسانی حقوق کی پامالیوں کے خلاف جدوجہد میں بلوچ قوم کے ساتھ ہے. وائس فار بلوچ مسنگ پرسنز کی طویل احتجاج کو سراہتے ہوے کہا ہم ان کی آواز کو تمام دنیا تک پہنچانے بھر پور کوشش کرینگے. انھوں نے آخر میں کہا کہ برطانیہ سمیت باقی تمام جمہوری ممالک کی اخلاقی ذمہ داری ہےکہ وہ بلوچستان میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں، آرمی اپریشن اور جبری گمشدیوں کا نوٹس لیں. اور بلوچستان کی آزاد حیثیت کو تسلیم کرکے بلوچ قوم کو ایران اور پاکستان کی غلامی سے نجات دلا ئیں

Share on
Previous article

حادثے میں لانگ مارچ میں شریک دو افراد زخمی

NEXT article

Pakistani security forces attacked across Balochistan, Two PAF personnel killed in Pasni

LEAVE A REPLY