بلوچستان: مختلف علاقوں سے آٹھ لاشیں برآمد

MUST READ

بيست و هفتم مارس  روزی سياه در تاريــخ بلوچستــــان

بيست و هفتم مارس روزی سياه در تاريــخ بلوچستــــان

گپ و ترانے کراچيءِ بلوچ آبادی لياری ءِ جاورانی سرا

گپ و ترانے کراچيءِ بلوچ آبادی لياری ءِ جاورانی سرا

نوکترین ریڈیو حال

نوکترین ریڈیو حال

مند میں پاکستانی آرمی کا شہید غلام محمد کے گھر پرحملہ

مند میں پاکستانی آرمی کا شہید غلام محمد کے گھر پرحملہ

چرا کمبود آب “مسئله امنیتی” شــد؟

چرا کمبود آب “مسئله امنیتی” شــد؟

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران

Independence Movement of Balochistan-

Independence Movement of Balochistan-

پرچہ! بلوچستانءِ وانگجاہ آس دیگ بنت؟ گپ و ترانےگون بلوچ احوالکار کیاّ بلوچءَ

پرچہ! بلوچستانءِ وانگجاہ آس دیگ بنت؟ گپ و ترانےگون بلوچ احوالکار کیاّ بلوچءَ

قابض پاکستان فورسز نے پیرکوہ کے مختلف علا قوں جن میں واگو ‘ چب در ‘ لیڑ پٹی ‘ سخین اور ڈوئی وڈھ شامل ہے شدید آپر یشن کر رہا ہے

قابض پاکستان فورسز نے پیرکوہ کے مختلف علا قوں جن میں واگو ‘ چب در ‘ لیڑ پٹی ‘ سخین اور ڈوئی وڈھ شامل ہے شدید آپر یشن کر رہا ہے

گپ ءُ ترانے گون بلوچ طلبا ایکشن کمیٹیءِ سروک ڈاکٹر ابابگر بلوچءَ بولان میڈیکل کالجءِ بلوچ نودربرانی جیڑاءِ سرا

گپ ءُ ترانے گون بلوچ طلبا ایکشن کمیٹیءِ سروک ڈاکٹر ابابگر بلوچءَ بولان میڈیکل کالجءِ بلوچ نودربرانی جیڑاءِ سرا

شھید حمید بلوچءِ پیغامءِ چا مچ جیلءَ – توار سرمچار وبلاگ

شھید حمید بلوچءِ پیغامءِ چا مچ جیلءَ – توار سرمچار وبلاگ

En Interview with Kurdish political activist Mr. Dovan about situation of Kobani Kurdistan

En Interview with Kurdish political activist Mr. Dovan about situation of Kobani Kurdistan

بولان سے بلوچ خواتین کی اغواء ، پاکستان بنگلہ دیش کی تاریخ دہرا رہا ہے: فرزانہ مجید بلوچ

بولان سے بلوچ خواتین کی اغواء ، پاکستان بنگلہ دیش کی تاریخ دہرا رہا ہے: فرزانہ مجید بلوچ

جنون کودک کشی اشغالگران در بلوچستان

جنون کودک کشی اشغالگران در بلوچستان

بلوچ وطن دوست رہنما حیربیار مری کا خصوصی انٹرویو

بلوچ وطن دوست رہنما حیربیار مری کا خصوصی انٹرویو

بلوچستان: مختلف علاقوں سے آٹھ لاشیں برآمد

2020-03-27 11:13:36
Share on

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے حکام کا کہنا ہے کہ صوبے کے مختلف علاقوں سے بدھ کے روز آٹھ افرادکی تشدد زدہ لاشیں برآمد ہوئی ہیں۔

تشدد زدہ نعشوں میں سے چار ڈیرہ بگٹی، تین کوئٹہ اور ایک آواران سے برآمد ہوئی ہیں۔

ڈیرہ بگٹی میں لیویز فورس کے ذرائع نے بی بی سی کو بتایا چار افراد کی نعشیں پیر کوہ کے علاقے سے دوپہر ساڑھے بارہ بجے برآمد کی گئیں۔

چاروں افراد کو نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے ہلا ک کیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے افراد کی شناخت نیک محمد، مزارخان، نورالدین اور سبزعلی کے نام سے ہوئی ہے۔

کو ئٹہ سے تین افراد کی ہاتھ پاؤں بندھی نعشیں مشرقی بائی پاس کے علاقے بھوسہ منڈی کے قریب پہاڑ کے دامن سے ملی تھیں۔

کوئٹہ انتظامیہ کے مطابق تینوں افراد کو گولیاں مارکر ہلاک کیا گیا تھا۔ لیویز فورس نے نعشوں کو شناخت کے لیے سول ہسپتال کوئٹہ منتقل کر دیا ہے۔

ادھر آواران کے ضلع سے بھی ایک شخص کی تشدد زدہ نعش برآمد ہوئی ہے۔

بلوچستان کے مختلف علاقوں سے سنہ دو ہزار نو کے بعد سے تشدد زدہ نعشوں کی بر آمدگی کا سلسلہ شروع ہوا۔

گزشتہ سال اکتوبر سپریم کورٹ میں محکمہ داخلہ حکومت بلوچستان کی جانب سے جو رپورٹ پیش کی گئی تھی اس کے مطابق اکتوبر تک بلوچستان سے چار سو سے زائد افراد کی نعشیں بر آمد ہوئی تھیں۔

جبکہ اکتوبر کے بعد بھی کوئٹہ سمیت بلوچستان کے مختلف علاقوں سے تشدد زدہ نعشیں برآمد ہوئی ہیں۔

سپریم کورٹ نے تشدد زدہ افراد کی نعشوں کی تحقیقات کا معاملہ سی آئی ڈی پولیس بلوچستان کے حوالے کر نے کا حکم دیا تھا۔

تاحال اس سلسلے میں کوئی بڑی پیش رفت نہیں ہوئی ہے۔

Share on
Previous article

Pakistani security forces attacked across Balochistan, Two PAF personnel killed in Pasni

NEXT article

نوکین حال

LEAVE A REPLY