بلوچ سرزمین پر قابض ریاستوں کا بلوچ دشمن خندقیں اور دیواریں کھڑی کرنے کا مشترکہ شازش

MUST READ

از شیخ خزعل تا شهید احمد نیسی

از شیخ خزعل تا شهید احمد نیسی

شگرد انتخاباتی روحانی و اهداف پشت پرده آن

شگرد انتخاباتی روحانی و اهداف پشت پرده آن

بالاچ راجءِ دپتران مدام زندگ انت

بالاچ راجءِ دپتران مدام زندگ انت

ایران سنی و شیعہ منافرت کی بنیاد پر بلوچ سرزمین، عرب دنیا اور خلیجی ممالک میں دہشت گردی کو ہوا دے رہا ہے :حیربیار مری

ایران سنی و شیعہ منافرت کی بنیاد پر بلوچ سرزمین، عرب دنیا اور خلیجی ممالک میں دہشت گردی کو ہوا دے رہا ہے :حیربیار مری

بلــوچ ءِ راجی سرمایہ ءُ مالانی پُل ءُ پانـچ

بلــوچ ءِ راجی سرمایہ ءُ مالانی پُل ءُ پانـچ

جنگ عرب و عجم – محمــد کـريــم بلـــوچ

جنگ عرب و عجم – محمــد کـريــم بلـــوچ

مـولانا آزات بــوت

مـولانا آزات بــوت

هم اور نوید بلوچ جیسے هزاروں بلوچ خود پاکستانی ریاستی دهشتگری کا شکار هیں – وحید بلوچ برلن جرمنی

هم اور نوید بلوچ جیسے هزاروں بلوچ خود پاکستانی ریاستی دهشتگری کا شکار هیں – وحید بلوچ برلن جرمنی

مـاتـی زبانءِ میان اُستمانـی روچ

مـاتـی زبانءِ میان اُستمانـی روچ

حمید صمصام نمونه بارز یک فاشیست ملی ـ مذهبی

حمید صمصام نمونه بارز یک فاشیست ملی ـ مذهبی

بيست و هفتم مارس  روزی سياه در تاريــخ بلوچستــــان

بيست و هفتم مارس روزی سياه در تاريــخ بلوچستــــان

رحمت آبادِ یزد و بیدخونِ عسلویه مایه شرم بشریت هستند

رحمت آبادِ یزد و بیدخونِ عسلویه مایه شرم بشریت هستند

دو دانک ” شورای دمکراسی خواهان ایران” ءِ باروا

دو دانک ” شورای دمکراسی خواهان ایران” ءِ باروا

تجاربی خونین از مذاکرات با اشغالگران

تجاربی خونین از مذاکرات با اشغالگران

بلـوچستــان ءِ آزاتــی ءِ روچ مبـارک بـات

بلـوچستــان ءِ آزاتــی ءِ روچ مبـارک بـات

بلوچ سرزمین پر قابض ریاستوں کا بلوچ دشمن خندقیں اور دیواریں کھڑی کرنے کا مشترکہ شازش

2020-03-31 12:23:42
Share on

Saturday, September 13

ایرانی رجعت پسند حکومت نے مغربی اور مشرقی بلوچستان میں ظاھری طور پر منشیات کی روک تھام کا نام دیکر 2007 میں کئی گہری فٹ خندقیں کھونے اور دیواریں کھڑی کرنے کا باقاعدہ طور پر آغار کیا جس میں بلوچستان کی ساحلی بیلٹ سے لیکر سے افغانستان کا سرحدی علاقہ شامل ھے جھاں پر بلوچستان کی حدود ختم ھوتی ھے یہ تقرببآ 700 کیلومیٹر لمبی ھے اور اسکا اب 90 % تعمیر تکمیل تک پہنچ چکا ھے۔
اس منصوبے میں ایران نے ایک کثیر رقم 590 میلیون ڈالرکا متخص کیا، اتنی بڑی رقم اس منصوبہ پر خرچ کرنا بلوچستان کی قومی آزادی کی تحریک کے خطرات کو روکنے اور بلوچ قومی رابطے کو منقطع کرنا اور کلچری اور اقتصادی طور پر انھیں مفلوج کرنا ھے تا کہ اس قومی آزادی کی تحریک کو فعال ھونے سے مختلف حوالے سے روک تھام کی جاسکے ۔
اپریل 2011 کو کو سابق ایرانی وزیر دفاع جنرل احمد وحیدی نے پاکستان کو مشرقی بلوچستان اور افغان سرحد پر خندقیں کھودنے پر تمام اخراجات کو ادا کرنے اور اس پر خفیہ طور پر دستخط بھی کئے گئے اور اس رقم کی ایک قسط بھی پاکستانی فوج اور اداروں کو دیگئی، مگر پاکستان کی طرف سے اس منصوبہ پر عمل درآمد تعطل کا شکار رھا۔ اب ایرانی حکومت کے دوبارہ اصرار پر اس کام کا آغاز پاکستانی فوج اور ایرانی ماھرین کی نگرانی میں چند ھفتوں سے جاری ھے۔ اور اسکے تمام اخراجات اور اس منصوبہ کو عملی جامع پہنانے کے لئے پاکسانی افسران کی خوش آمد کے لئے بڑی رقم متخص کی گئی ھے۔

Anti-B8 1

Share on
Previous article

قلات و نوشکی میں بڑے پیمانے پہ فوجی نقل و حرکت کی اطلاع

NEXT article

جیش العدل کا آسکان سراوان میں پاسداران کے کیمپ پر حملہ، 10 پاسدار ھلاک ، 2 ٹینک اور کیمپ تباہ

LEAVE A REPLY