تربت: فورسز نے محاصرہ شدہ مکان سے خاتون کو دو بچوں سمیت نامعلوم مقام پہ منتقل کر دیا

MUST READ

Baloch geographical importance and internal complexities

Baloch geographical importance and internal complexities

هجوم لشکر تمدن ستیز خامنه ای و العبادی به کوردستان مستقل

هجوم لشکر تمدن ستیز خامنه ای و العبادی به کوردستان مستقل

تمام آزادی پسند بلوچ 5 اگست کو برلن کے احتجاجی مظاہرے میں شرکت کریں : حیربیار مری

تمام آزادی پسند بلوچ 5 اگست کو برلن کے احتجاجی مظاہرے میں شرکت کریں : حیربیار مری

دَرانڈیھیں بلوچانی انسانی اُگدَہ

دَرانڈیھیں بلوچانی انسانی اُگدَہ

بلوچستان میں ریفرینڈم نہیں چاہتے: حیر بیار مری

بلوچستان میں ریفرینڈم نہیں چاہتے: حیر بیار مری

واگذاری کنترل بخشی ازمرز سراوان به نيروی تروريستی قدس

واگذاری کنترل بخشی ازمرز سراوان به نيروی تروريستی قدس

بلوچ ورنایانی راجی بیداری

بلوچ ورنایانی راجی بیداری

مروچی تربتءِ ریلیءَ من چہ دیست

مروچی تربتءِ ریلیءَ من چہ دیست

شهزانــــتیں صبا دشتیاری نمیران انت

شهزانــــتیں صبا دشتیاری نمیران انت

قومی اشتراک عمل : آزادی پسند تنظیموں سے رابطے کیلئے باقاعدہ کمیٹی تشکیل دی ہے : حیربیار مری

قومی اشتراک عمل : آزادی پسند تنظیموں سے رابطے کیلئے باقاعدہ کمیٹی تشکیل دی ہے : حیربیار مری

بولانءِ دمگ لکڑ ءُ پل کڑیءَ پاکستانی هوائی فوجءِ بمب گواری – نوکترین ریڈیو حال

بولانءِ دمگ لکڑ ءُ پل کڑیءَ پاکستانی هوائی فوجءِ بمب گواری – نوکترین ریڈیو حال

هچ بلوچ، بلوچستانءِ بهر کنگءَ نه منیت: مولوی کوهی

هچ بلوچ، بلوچستانءِ بهر کنگءَ نه منیت: مولوی کوهی

شهید واجہ صبا دشتیاریءِ ترانے 12 مئی 2011 کوئٹہ پریس کلبءِ دیما

شهید واجہ صبا دشتیاریءِ ترانے 12 مئی 2011 کوئٹہ پریس کلبءِ دیما

بلوچ نوجوانوں سے اپیل ھے کہ وہ بلوچ رائٹس کے تحت وہ اس ریاستی جرم کے خلاف آواز بلند کریں

بلوچ نوجوانوں سے اپیل ھے کہ وہ بلوچ رائٹس کے تحت وہ اس ریاستی جرم کے خلاف آواز بلند کریں

تربت . شاپک کے ایریا میں پاکستانی فوج کا بربریت . کئی بے گناہ بلوچ گرفتار . لوٹ مار کے بعد گهروں کو آگ لگا دیا

تربت . شاپک کے ایریا میں پاکستانی فوج کا بربریت . کئی بے گناہ بلوچ گرفتار . لوٹ مار کے بعد گهروں کو آگ لگا دیا

تربت: فورسز نے محاصرہ شدہ مکان سے خاتون کو دو بچوں سمیت نامعلوم مقام پہ منتقل کر دیا

2020-03-30 14:26:30
Share on

تربت میں ڈاکٹر کالونی کے محاصرہ شدہ مکان سے سکیورٹی فورس نے ایک خاتون اور دو بچوں کواٹھاکر نامعلوم مقام پرمنتقل کردیا۔

تربت میں بی این ایف کی خواتین کا بی ایس او آزاد کے سابق رہنما اور مبینہ طور پر ایک مزاحمتی تنظیم کے لیڈرکے گھر کے محاصرے کے خلاف تیسرے روز بھی احتجاج ہورہا تھا۔ مظاہرین نے مین چوک کے قریب دکانیں بند کرادیں ۔

ڈاکٹر کالونی میں واقع بلوچی زبان کے نوجوان شاعر حفیظ رﺅف کے والدکے گھر پر مسلسل سات دنوں سے پولیس کے محاصرے اور خواتین و بچوں کو یر غمال بنانے کے خلاف بی این ایف کی جانب سے خواتین نے تربت شہر میں تیسرے دن بھی ریلی نکالی اور مین چوک پر دھرنا دے کر احتجاج کیا۔

مظاہرین نے پلے کارڈ اٹھائے تھے ،جن پر انصاف دو، اقوام متحدہ اور عالمی اداروں سے مڈ کے مطالبات در ج تھے۔مظاہرین پولیس اور انتظامیہ کے خلاف نعرہ بازی بھی کڑہے تھے۔

تیسرے دن گرلز کالج سے ریلی کا آغاز ہوا ۔مظاہرین شہر کی مختلف سڑکوں پر مارچ کرتے رہے ۔بعد ازاں مین چوک پر پہنچ کر دھرنا دے کر بیٹھ گئے۔

اس دوران انہوں نے ٹریفک کی آمدورفت معطل کر کے شہر کی اہم شاہراہ پر تمام دکانیں بند کرادیں ۔

آخری اطلاع کے مطابق خاتون کے اہلِ خانہ کا کہنا ہے کہ سکیورٹی فورس نے مذکورہ مکان سے خاتون اور ان کے دو بچوں کو یہاں سے کہیں اور منتقل کردیا ۔

تاہم انتظامیہ کی جانب سے ابھی تک اس بارے میں موقف سامنے نہیں آیا اور یہ بھی معلوم نہ ہوسکا کہ خاتون اور ان کے بچوں کو فورسز نے کہاں پر منتقل کیا ہے۔

Share on
Previous article

من ءُ تو همراہ نہ ایں – حفیظ روف

NEXT article

تربتءَ ڈاکٹر کالونیءِ بلوچ چک ءُ جنیانی محاصرهءِ بابتءَ گلگدارے گون ایچ آر سی پی کیچءِ واجہ غنی پروازءَ

LEAVE A REPLY