جیش العدل کا آسکان سراوان میں پاسداران کے کیمپ پر حملہ، 10 پاسدار ھلاک ، 2 ٹینک اور کیمپ تباہ

MUST READ

نیوکاہان کوئٹہ پاکستانی قابض فورسز کی دہشتگردانہ کاروائیاں جاری150کے قریب افراد اغوا

نیوکاہان کوئٹہ پاکستانی قابض فورسز کی دہشتگردانہ کاروائیاں جاری150کے قریب افراد اغوا

آیاعربستان سعودی بہ منابع طبیعی ومعادنِ بلوچستان چشم دوخته است؟

آیاعربستان سعودی بہ منابع طبیعی ومعادنِ بلوچستان چشم دوخته است؟

بلوچ اکٹوسٹ لندنءَ بی بی سیءِ دیما احتجاجءَ گون واجہ ڈاکٹر مصطفیءَ گپ ءُ ترانے

بلوچ اکٹوسٹ لندنءَ بی بی سیءِ دیما احتجاجءَ گون واجہ ڈاکٹر مصطفیءَ گپ ءُ ترانے

گپ ءُ ترانے گون جنوبی کوریاءِ بلوچ اکٹیوسٹ واجہ نصیربلوچءَ لانگ مارچءِ بابتءَ

گپ ءُ ترانے گون جنوبی کوریاءِ بلوچ اکٹیوسٹ واجہ نصیربلوچءَ لانگ مارچءِ بابتءَ

زبانهای اصیل کوردی، تورکی، تورکمنی، عربی و بلوچی زنده هستند

زبانهای اصیل کوردی، تورکی، تورکمنی، عربی و بلوچی زنده هستند

پاکستانی الیکشن بلوچ سرزمینءِ سرا

پاکستانی الیکشن بلوچ سرزمینءِ سرا

تمپ و گومازیء پاکستانی فوجی آپریشنء بابتء بلوچ ہیومن راٹس آرگنائزیشن ء سروک بی بی گل بلوچء گو ن گپ تران

تمپ و گومازیء پاکستانی فوجی آپریشنء بابتء بلوچ ہیومن راٹس آرگنائزیشن ء سروک بی بی گل بلوچء گو ن گپ تران

جیش العدل کے کمانڈر ایوب بلوچ سے گفتگو

جیش العدل کے کمانڈر ایوب بلوچ سے گفتگو

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران

سلگتا بلوچستان اور اقوام متحدہ کی خاموشی ؟……ڈاکٹر منان بلوچ

سلگتا بلوچستان اور اقوام متحدہ کی خاموشی ؟……ڈاکٹر منان بلوچ

بلـوچ ءِ هـوں هم سُهـر اِنت

بلـوچ ءِ هـوں هم سُهـر اِنت

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران – قسمت پنجم

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران – قسمت پنجم

پاکستان جہادی کلچر ودہشت گردی کا مرکز و فیکٹری ہے : حیربیار

پاکستان جہادی کلچر ودہشت گردی کا مرکز و فیکٹری ہے : حیربیار

حسیـن معروفـی کیست؟

حسیـن معروفـی کیست؟

نوکین حال

نوکین حال

جیش العدل کا آسکان سراوان میں پاسداران کے کیمپ پر حملہ، 10 پاسدار ھلاک ، 2 ٹینک اور کیمپ تباہ

2020-03-26 14:52:35
Share on

Tuesday, September 09, 2014

مغربی بلوچستان / جیش العدل کے نیوز عدالت کے مطابق گزشتہ (شب) رات کو سراوان کے سرحدی حدود اسکان میں پاسداروں کے کیمپ پرحملہ کیا گیا جو کہ رات کے 1 تا 4 بجے کے درمیان جاری رھی۔ اسی حملے کے دوران جیش العدل کے سرمچاروں سے بارود سے بھری گاڑی کیمپ کے دروازے کے قریب پارک کی اور اسے ریمنوٹ کنٹورل سے اڑایا گیا۔ جس کے نتیجے میں 2 ٹینک تباہ اور کیمپ منہدم ھوا، اس حملہ میں 10 پاسدار ھلاک اور متعدد زخمی ۔پاسداروں کی مدد کے لئے تازہ دم دستہ ٹینکوں سے جیش العدل کے سرمچاروں پر حملہ کیا گیا ، مگر سرمچاروں نے جدید ھتیاروں سے حملہ کر کے انھیں پسپا کردیا۔
یہ حملہ جیش نصر کے سربراہ عبدالرؤف ریگی کے قتل کے انتقام کی ایک کڑی ھے جو کہ چند دنوں قبل ایرانی خفیہ ادارے” اطلاعات” کی ایماہ پر قتل کئے گئے تھے۔ جیش العدل نے بلوچستان تمام آبادکاروں کو اس سال کے آخر تک بلوچستان سے نکلنے کی مہلت دی ھے ورنہ دوسری صورت ان پر حملہ کیا جا سکتا ھے، جیش العدل نے ان تمام بلوچوں کو بھی انتباہ کی ھے جو کہ بلوچ دشمن حکومت کے ساتھ ملکر بلوچ کش منصوبوں میں شریک ھیں ، باز رھے ورنہ انھیں سخت سزا دی جاسکتی ھے۔ جیش العدل اپنے پچھلے پریس ریلیزوں میں قومی جھدوجھد اورایرانی حکومتی مذھبی رواداری کے خلاف مسلحانہ جنگ کا اعلان کرچکا ھے۔

Share on
Previous article

پدا مئے بچ بالاچ انت – طلاءُ سنجگءُ ساچین – بشیربیدار

NEXT article

آزاد بلوچستان کی جنگ سب بلوچوں کو ملکر لڑنی هونگی – بی جے پی کے ترجمان انیل بالونی

LEAVE A REPLY