دنیا کو بلوچستان میں قتل عام و جبری گمشدگیوں پر خاموشی توڑنی چاہیے – ڈاکٹر اللہ نذر بلوچ

MUST READ

بلوچستــــان گلزميـــن اجـــدادی ماســـت

بلوچستــــان گلزميـــن اجـــدادی ماســـت

ماہِ اپریل میں آپریشن دوران 120 سے زائد افراد لاپتہ، 24قتل کئے گئے، بی بی گل بلوچ

ماہِ اپریل میں آپریشن دوران 120 سے زائد افراد لاپتہ، 24قتل کئے گئے، بی بی گل بلوچ

بولان سے خواتین و بچوں کا اغواء پاکستانی دہشتگردی کا تسلسل ہے۔حیربیار مری

بولان سے خواتین و بچوں کا اغواء پاکستانی دہشتگردی کا تسلسل ہے۔حیربیار مری

بلــــوچ گلزميــــن ءِ انــــداز ءُ سيمســـــراں

بلــــوچ گلزميــــن ءِ انــــداز ءُ سيمســـــراں

درماندگی فاشیسم تمامیت خواه پارس

درماندگی فاشیسم تمامیت خواه پارس

جنگ روانی استاندار اشغالگران در بلوچستان

جنگ روانی استاندار اشغالگران در بلوچستان

طرح تقسیم بلوچستان خیانتی است بزرگ به ملت بلوچ

طرح تقسیم بلوچستان خیانتی است بزرگ به ملت بلوچ

جماعت اسلامی اور 20 اکتوبر1914 ؁ کی قومی کانفرنس – کردگار بلوچ

جماعت اسلامی اور 20 اکتوبر1914 ؁ کی قومی کانفرنس – کردگار بلوچ

استقلال کوردستان مبارک باد

استقلال کوردستان مبارک باد

دو دانک گوں رودراتکی بلوچستان ءِ راجی رھشوناں

دو دانک گوں رودراتکی بلوچستان ءِ راجی رھشوناں

گزشته مہنے نومبر کو ردیگ مند ایرانی سرحد پر دو جگه بارودی سرنگ پٹنهے سے 8 بلوچوں کں موت واقع هوئی هے

گزشته مہنے نومبر کو ردیگ مند ایرانی سرحد پر دو جگه بارودی سرنگ پٹنهے سے 8 بلوچوں کں موت واقع هوئی هے

قومی اشتراک عمل : آزادی پسند تنظیموں سے رابطے کیلئے باقاعدہ کمیٹی تشکیل دی ہے : حیربیار مری

قومی اشتراک عمل : آزادی پسند تنظیموں سے رابطے کیلئے باقاعدہ کمیٹی تشکیل دی ہے : حیربیار مری

فری بلوچستان موومنٹ مہم ,تمام آزادی پسند شرکت کرسکتے ہیں :حیربیار مری

فری بلوچستان موومنٹ مہم ,تمام آزادی پسند شرکت کرسکتے ہیں :حیربیار مری

دُزّآپ ءِ بُلـوارِ (زاهدانِءِ چوک) بلوچستـــان

دُزّآپ ءِ بُلـوارِ (زاهدانِءِ چوک) بلوچستـــان

کانسارها ومعادن مس در بلوچستـان اشغالی

کانسارها ومعادن مس در بلوچستـان اشغالی

دنیا کو بلوچستان میں قتل عام و جبری گمشدگیوں پر خاموشی توڑنی چاہیے – ڈاکٹر اللہ نذر بلوچ

2020-03-25 22:07:43
Share on

کوئٹہ / بلوچ قوم دوست و آزادی پسند رہنماڈاکٹر اللہ نذر بلوچ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ” ٹوئٹر‘‘ پر اپنے چند تازہ ترین ٹوئیٹ پیغام میں بلوچستان میں ہزاراہ برادری کی ٹارگٹ کلنگ کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں بلوچستان میں ہزارہ برادری کی ٹارگٹ کلنگ کی پرزور مذمت کرتا ہوں۔ یہ بلوچ تحریک آزادی کو کمزور کرنے کی ایک سازش ہے۔ 

انہوں نے ڈیرہ بگٹی میں پاکستانی فوج کے ہاتھوں حالیہ فوجی آپریشن میں متعڈ خواتین و بچوں کی گمشدگی پر اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کے عالمی اداروں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستانی فوج نے سوئی بلوچستان میں انیس بلوچ خواتین و بچوں کو اغوا کیا ہے اور ایک بچے کو ماں کے ساتھ قتل کیا ہے۔ اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کے چیمپیئن کہاں ہیں؟
بلوچ رہنما نے کہا ہے کہ اب دنیا کو پاکستانی فورسز کی جانب سے بلوچستان میں قتل عام، نسل کشی اور جبری گمشدگیوں پر اپنی خاموشی توڑنی چاہیے۔
انہوں نے اپنے ٹوئیٹ پیغام میں ضلع کیچ میں چار دنوں سے جاری فوجی آپریشن کے حوالے سے کہا ہے کہ پاکستانی فوج زعمران میں فضائی اور زمینی آپریشن میں بلا تفریق بلوچوں کو قتل کر رہی ہے۔ ان جرائم کو نظر انداز کرنا اقوام متحدہ کیلئے باعث شرم ہے۔

Share on
Previous article

حسیـن معروفـی کیست؟

NEXT article

بر دانش آموزان بلوچ چه می گذرد؟

LEAVE A REPLY