قومی اشتراک عمل : آزادی پسند تنظیموں سے رابطے کیلئے باقاعدہ کمیٹی تشکیل دی ہے : حیربیار مری

MUST READ

 زبانهای اصیل کوردی، تورکی، تورکمنی، عربی و بلوچی زنده هستند

زبانهای اصیل کوردی، تورکی، تورکمنی، عربی و بلوچی زنده هستند

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران

مغربی بلوچستانءِ جهدکار کمال ناروئیءِ گواستگین تران گون ریڈیو گوانکءَ

مغربی بلوچستانءِ جهدکار کمال ناروئیءِ گواستگین تران گون ریڈیو گوانکءَ

بلوچ ءِ هون هم سُهر اِنت ، مولوی صاحب

بلوچ ءِ هون هم سُهر اِنت ، مولوی صاحب

گپ ءُ ترانے گون شھید حاجی عبدالرزاق بلوچءِ گُھارءَ چا کراچيءَ

گپ ءُ ترانے گون شھید حاجی عبدالرزاق بلوچءِ گُھارءَ چا کراچيءَ

کوردستـــان ءِ پلیـــں شهیـــدان ءَ هـــزاراں ســـــلام

کوردستـــان ءِ پلیـــں شهیـــدان ءَ هـــزاراں ســـــلام

پاکستانی زوراکین فوجءَ بلوچستانءِ تیاپ دپ پسنيءَ 70 بلوچ ورنا بیگواہ کت

پاکستانی زوراکین فوجءَ بلوچستانءِ تیاپ دپ پسنيءَ 70 بلوچ ورنا بیگواہ کت

چرا قاتلانِ مردم بلوچ مجازات نمی شوند؟

چرا قاتلانِ مردم بلوچ مجازات نمی شوند؟

کسان سالیں بلوچ دُهتگان بی بی صورت ، سکینہ ءُ سمینہ انگت شکارپور سندهءَ قید انت – گپءُ ترانے گون یکے چا بیگواهیں بلوچ دُهتگانی ماتءَ

کسان سالیں بلوچ دُهتگان بی بی صورت ، سکینہ ءُ سمینہ انگت شکارپور سندهءَ قید انت – گپءُ ترانے گون یکے چا بیگواهیں بلوچ دُهتگانی ماتءَ

بلوچ باید انت وتی زمین ءُ ڈگارءِ مستر وت بہ بیت۔ عبداللہ بلوچ

بلوچ باید انت وتی زمین ءُ ڈگارءِ مستر وت بہ بیت۔ عبداللہ بلوچ

حادثے میں لانگ مارچ میں شریک دو افراد زخمی

حادثے میں لانگ مارچ میں شریک دو افراد زخمی

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران

بلوچستان اِشغالی در چنگال خونینِ غارتگران

جھد ؤ تپاکی

جھد ؤ تپاکی

ھَشر ءُ کمک کاری گرانبھائیں بلوچی دود اَنت

ھَشر ءُ کمک کاری گرانبھائیں بلوچی دود اَنت

بلوچ ایں ما بلوچ ایں – خطاب به نظام استبدادی جهموری اسلامی

بلوچ ایں ما بلوچ ایں – خطاب به نظام استبدادی جهموری اسلامی

قومی اشتراک عمل : آزادی پسند تنظیموں سے رابطے کیلئے باقاعدہ کمیٹی تشکیل دی ہے : حیربیار مری

2020-03-30 15:22:01
Share on

لندن / بلوچ قوم دوست رہنما حیر بیا ر مری نے اپنے بیان میں بلوچ قوم کو قومی ہم آہنگی اور اشتراک عمل کے حوالے سے آگاہی دیتے ہوئے کہا کہ خطے کے بدلتے ہوئے حالات ایک آزاد بلوچستان کی تشکیل ممکن بناسکتے ہیں بشر طیکہ بلوچ قوم اپنی سرزمین پر طاقت کے طور پر ابھر کر سامنے آئے۔ بلوچ سرزمین پر بلوچ قومی طاقت منوانے کے لیے ضروری ہے کہ سب اپنی کمزوریوں کو دور کرکے غلطیوں کو مان کر نئے سرے سے قومی مفادات کے تحت مشترکہ ڈسپلین پر اصولی اشتراک کریں۔ انہوں نے اپنے بیان میں مزید کہا کہ موجودہ جدوجہد کی شروعات سے پہلے ہم نے باقاعدہ اپنی منزل کا تعین کیا تھا کہ ہمیں بلوچ سرزمین کو پھر سے آزادی دلانا ہے۔ ہم ہمیشہ سخت اصول اور ڈسپلین کے تحت کام کرتے رہے کیونکہ ہم اس حقیقت کو جانتے ہیں کہ جس طرح قانون کے بغیر ملک و ریاست آنارکی کا شکار ہوسکتے ہیں بلکل اسی طرح ڈسپلین اور اصولوں کے بغیر جدوجہد انشار اور کمزروی کا شکار ہوجاتے ہیں۔ بے اصولی اور کمزور ڈسپلین نے موجودہ تنظیموں کو کمزور کیا اور اس کی وجہ سے جدوجہد متوقع نتائج نہیں دے سکا ان ہی کمزوریوں کو دور کرنے کے لیے ہم نے کسی بھی ذاتی، گروہی، جماعتی یا تنظیمی مفادات سے بالا تر ہوکر بلوچ قومی مفادات اور بلوچ وطن کی آزادی کو مد نظر رکھ کر اصولی اشتراک کے لیے دو شرائط بلوچ قوم اور تمام تنظیموں کے سامنے رکھے۔ آزاد بلوچستان کے لیے کسی بھی موثر اور حقیقی اشتراک عمل کے آغاز کے لیے یہ شرائط ذاتی و گروہی مفاد کی حوصلہ شکنی اور مجموعی بلوچ مفادات کی حوصلہ افزائی کریں گے۔ اسی مقصد کو آگے لیجانے کے لیے ہم نے دوستوں پر مشتمل با قاعدہ کمیٹی تشکیل دی ہے جو کہ اعتماد بحالی اور ان دو شرائط پر بات چیت کریں گے تاکہ اس کے بعد قومی مفادات کے تحت اشراک عمل کا آغاز ہوسکے ۔ تشکیل شدہ کمیٹی بہت جلد آزادی پسند تنظیموں سے رابطہ کر ے گی اور اس حوالے جو بھی پیش رفت ہوگی اس سے بلوچ قوم کو آگاہ کیا جائے گا۔

Share on
Previous article

پاکستان چین کی مفادات کی خاطر بلوچوں کا بے رحمی سے قتل عام کررہا ہے: حیر بیار مری

NEXT article

واجہ شھید غلام محمد بلوچءِ آخرین تران گون گوانکءَ, واجہ ءِ اے تران 1 اپریل 2009 گرگ بوتگ

LEAVE A REPLY