پاکستان چین کی مفادات کی خاطر بلوچوں کا بے رحمی سے قتل عام کررہا ہے: حیر بیار مری

پاکستان چین کی مفادات کی خاطر بلوچوں کا بے رحمی سے قتل عام کررہا ہے: حیر بیار مری

2020-03-26 09:20:22
Share on

لندن  / بلوچ قوم دوست رہنماحیربیار مری نے کہا کہ ہماری وہ تسلیم شدہ حقیقت پر مبنی بیان جو چین کے حوالے دیا گیا تھا کہ چین کی معاونت اور تعاون سے پاکستانی فوج بلوچستان میں انسانی حقوق کی پامالی کررہا ہے اور چین نے پاکستان پر زوردیا ہے کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کو کامیاب بنانے کے لیے بلوچوں کے خلاف ننگی جارحیت کا ارتکاب کریں ہماری اس موقف کی تسلیم کنندہ پاکستان کے وزیر عبدالقادر چنال ہے جنھوں نے جیو نیوز کے کیپیٹل ٹالک میں تسلیم کیا کہ چین نے اقتصادی راہداری کو بلوچستان میں پورٹ کی مخالفت کرنے والوں کی قتل عام سے مشروط کیا تھا ،چین کی اس شرط معاہدہ کے تحت پاکستانی فوج نے بلوچستان میں ظلم جبر اور درندگی کو بڑھایا ہے ،جہاں لوگوں کے گھروں کو چلایا جارہا ہے معصوم بچوں اور عورتوں کو بھی درندگی سے قتل کیا جارہا ہے ،پاکستانی اسٹیٹ کے نمائندے سیکریڑی داخلہ بلوچستان اکبر حسین درانی خود اعتراف جرم کرچکا ہے کہ پاکستان نے ایکشن پلان کے تحت 12234بلوچوں کااغوا کرکے لاپتہ ا ور 323بلوچوں کو شہید کرچکے ہیں حقیقت میں بلوچوں کو ہزاروں کی تعدا د میں ماورائے عدالت اور آپریشنز کے زریعے قتل کیاگیا اور کئی ہزار بلوچوں کو جبری طور پر لاپتہ کیا یہ سلسلہ بلوچستان کے طول و عرض میں تاحال جاری ہے پاکستان چین کی تَشفی کی خاطر بلوچوں کا بے رحمی سے قتل عام کررہا ہے ۔کیونکہ پاکستانی فوج روپے پربکا ہوا اور بھاڑے کا فوج ہے جس کو جہاں سے پیسہ اور فوجی سامان کے ساتھ حکم ملتا ہے یہ اسی طرح کرتا ہے جنرل ایوب خان نے پہلے امریکہ میں جاکر کہا کہ پاکستانی فوج آپکی فوج ہے جو امریکہ کہے گا یہ فوج وہی کرے گا لیکن جنرل ایوب سے لیکر مشرف تک اس فوج نے پیسہ امریکہ سے لیکر الٹا انکے مفادات کے برعکس کام کیا اور مشرف نے جنونی جہادیوں اور دہشت گردی کے خلاف امریکہ کے اتحادی ہونے کے نام پر امریکہ سے پیسہ اور فوجی سامان لیا لیکن وہی پیسہ اور سامان سے جہادی تنظیموں کی مدد اور کمک کرتے ہوئے انھیں افغانستان ، انڈیا کے خلاف اور خطے میں اپنے مفادات کی خاطر استعمال کیا ،جنھوں نے افغانستان سمیت پورے خطے میں جنونی جہادیوں اور بنیاد پرستوں کے ذریعے تباہی مچایا ہے انہی شدت پسندوں کے زریعے پاکستان افغانستان میں آگ اور خون کی ہولی کھیل رہا ہے۔ اور اب وہی فوج پیسوں کی خاطر چین کا معاون بن کر بلوچوں کے لیے انکے زمین تنگ کررہا ہے اور اندھا دُھند اور بِلاامتیاز تمام بلوچوں مرد عورتوں بچوں سمیت سب کو یکساں ریاستی جبر اور زوراکی کا شکار بنایا جارہا ہے اب دنیا بھی بلوچ قوم پر ہونے والے مظالم پر اپنی خاموشی توڑ کر بلوچستان میں پاکستانی اور چینی بربریت پر آواز اٹھائیں

Share on
Previous article

مقبوضہ سندھ میں پولیس کے اختیارات رینجرزنامی آرمی کے ایک شاخ کے ہاتھوں میں ہیں – چیئرمین خلیل بلوچ

NEXT article

قومی اشتراک عمل : آزادی پسند تنظیموں سے رابطے کیلئے باقاعدہ کمیٹی تشکیل دی ہے : حیربیار مری

LEAVE A REPLY

MUST READ

زبان

زبان

بلــوچ هُـــژّار

بلــوچ هُـــژّار

چرا دولت آلمان شاهرودی را فراری داد؟

چرا دولت آلمان شاهرودی را فراری داد؟

حربه های ضدبشری فاشيسم تماميت خواه پارس در بلوچستان اشغالی

حربه های ضدبشری فاشيسم تماميت خواه پارس در بلوچستان اشغالی

واجه عبدالصمد امیریءِ تپاکیءِ پیغام پا بلوچ راجءَ

واجه عبدالصمد امیریءِ تپاکیءِ پیغام پا بلوچ راجءَ

بلوچ قوم دوست رھنما واجہ حیربیار مريءِ کلو پا 27 مارچءِ بابتءَ

بلوچ قوم دوست رھنما واجہ حیربیار مريءِ کلو پا 27 مارچءِ بابتءَ

بلوچستانءَ انسانی حقانی لگتمالی ءُ زوراکیانی آماچ بوتگین بلوچانی فریات – اولُی بهر

بلوچستانءَ انسانی حقانی لگتمالی ءُ زوراکیانی آماچ بوتگین بلوچانی فریات – اولُی بهر

گیبن کیچءَ 13 اپریلءَ 2015 پاکستانی فوجی آپریشنءِ حقیقت

گیبن کیچءَ 13 اپریلءَ 2015 پاکستانی فوجی آپریشنءِ حقیقت

Baloch National poet Qazi Mubarak visits Voice for Baloch Missing Persons protest camp

Baloch National poet Qazi Mubarak visits Voice for Baloch Missing Persons protest camp

گپ و ترانے چا گیبنءَ گون شهید حیات بیوسءِ گهارءَ

گپ و ترانے چا گیبنءَ گون شهید حیات بیوسءِ گهارءَ

گار ءُ بیگواه بوتگین بلوچانی بیگواهیءِ احتجاجی کیمپءَ 2288 روچ گواستگ

گار ءُ بیگواه بوتگین بلوچانی بیگواهیءِ احتجاجی کیمپءَ 2288 روچ گواستگ

سویڈش شوشلیٹ پاڑٹی کے کریسٹوفر لونڈ بیری 10دسمبر2015 کو گوتنبرگ میں بولان کے بلوچ خواتین کی پاکستانی فورسز کی توسط سے اغواه کے خلاف مظاهرہ سے خطاب کررهے هیں

سویڈش شوشلیٹ پاڑٹی کے کریسٹوفر لونڈ بیری 10دسمبر2015 کو گوتنبرگ میں بولان کے بلوچ خواتین کی پاکستانی فورسز کی توسط سے اغواه کے خلاف مظاهرہ سے خطاب کررهے هیں

جنون کودک کشی اشغالگران در بلوچستان

جنون کودک کشی اشغالگران در بلوچستان

سفارت کاری ، بلوچ تحریک کی اہم ضرورت – کریمہ بلوچ

سفارت کاری ، بلوچ تحریک کی اہم ضرورت – کریمہ بلوچ

گنجیں گوادر شُت؟

گنجیں گوادر شُت؟