گوادر میں پاکستان نیوی کے اہلکاروں پر حملے کی ذمہ داری بی ایل اے قبول کرتی ہے۔

MUST READ

اقوام متحده کی انسانی حقوق کونسل کے 33 ویں اجلاس میں بهارت کا بلوچستان میں انسانی حقوق کی پائیمالی پر پاکستان کو ذمه دار پر بی جے پی کے ترجمان انیل بالونی سے گفتگو

اقوام متحده کی انسانی حقوق کونسل کے 33 ویں اجلاس میں بهارت کا بلوچستان میں انسانی حقوق کی پائیمالی پر پاکستان کو ذمه دار پر بی جے پی کے ترجمان انیل بالونی سے گفتگو

دکتر الله نظر راجی جنزءِ لائکیـں رهشــون

دکتر الله نظر راجی جنزءِ لائکیـں رهشــون

جمعیت علماء اسلام ءُ جماعت اسلامی مئے جَنگ ءُ تشدد کنگءِ ذمہ واراں انت ۰ پنجاب یونیورسٹیءِ بلوچ نودربر

جمعیت علماء اسلام ءُ جماعت اسلامی مئے جَنگ ءُ تشدد کنگءِ ذمہ واراں انت ۰ پنجاب یونیورسٹیءِ بلوچ نودربر

Reports of military operations in New Kahan Quetta and Dera Bugti Balochistan

Reports of military operations in New Kahan Quetta and Dera Bugti Balochistan

دنیا کو بلوچستان میں قتل عام و جبری گمشدگیوں پر خاموشی توڑنی چاہیے – ڈاکٹر اللہ نذر بلوچ

دنیا کو بلوچستان میں قتل عام و جبری گمشدگیوں پر خاموشی توڑنی چاہیے – ڈاکٹر اللہ نذر بلوچ

پاکستانی فوج نے بلوچستان میں حوصلہ کھو دیا،سی پیک ناکام ہے ۔ ڈاکٹر اللہ نذر

پاکستانی فوج نے بلوچستان میں حوصلہ کھو دیا،سی پیک ناکام ہے ۔ ڈاکٹر اللہ نذر

پادآتکگیں بلوچ ورنایانی نامءَ

پادآتکگیں بلوچ ورنایانی نامءَ

شهید کمبر چاکر

شهید کمبر چاکر

نواب مری کو بھی کاہان کوہستان مری لے جانے کے بجائے نیوکاہان کوئٹہ میں اپنے فکری ساتھیوں کے قبرستان میں سپرد خاک کیا جائے۔حیربیار مری

نواب مری کو بھی کاہان کوہستان مری لے جانے کے بجائے نیوکاہان کوئٹہ میں اپنے فکری ساتھیوں کے قبرستان میں سپرد خاک کیا جائے۔حیربیار مری

طرحِ تجزیه و تقسیـم بلوچستـان خیانتی است بزرگ به ملت بلـوچ سرزمین بلوچستــان درطول تاریخ به مردم مقاوم بلــوچ تعلـق داشته است

طرحِ تجزیه و تقسیـم بلوچستـان خیانتی است بزرگ به ملت بلـوچ سرزمین بلوچستــان درطول تاریخ به مردم مقاوم بلــوچ تعلـق داشته است

شھمیر اکبرخان مدامی نمیران انت

شھمیر اکبرخان مدامی نمیران انت

راسیستی سیاست ءُ کارکِردءِ یک دَروَرے

راسیستی سیاست ءُ کارکِردءِ یک دَروَرے

شاپک کیچءِ ڈرانڈیں بوتگینان گون گپ و ترانے ءُ بی ایچ آر او سروک بی بی گلءِ رپورٹ

شاپک کیچءِ ڈرانڈیں بوتگینان گون گپ و ترانے ءُ بی ایچ آر او سروک بی بی گلءِ رپورٹ

بلوچ قوم دوست رہنما حیربیار مری نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ آوارن میں بلوچ فرزندوں پر پاکستانی فورسز کی جانب سے حملہ اور اسے مذہبی رنگ دینا بلوچستان میں پاکستانی فوج کی شکست اور بوکھلاہٹ کو ظا ہر کرتا ہے ان میں اتنا غیرت بھی نہیں ہے

بلوچ قوم دوست رہنما حیربیار مری نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ آوارن میں بلوچ فرزندوں پر پاکستانی فورسز کی جانب سے حملہ اور اسے مذہبی رنگ دینا بلوچستان میں پاکستانی فوج کی شکست اور بوکھلاہٹ کو ظا ہر کرتا ہے ان میں اتنا غیرت بھی نہیں ہے

پنجگور کے علاقے تپس ہائی اسکول کے قریب سے فورسز نے اکرم ولداسمائیل کو اِن کے گھر کے سامنے سے اغوا کرلیا

پنجگور کے علاقے تپس ہائی اسکول کے قریب سے فورسز نے اکرم ولداسمائیل کو اِن کے گھر کے سامنے سے اغوا کرلیا

گوادر میں پاکستان نیوی کے اہلکاروں پر حملے کی ذمہ داری بی ایل اے قبول کرتی ہے۔

2021-03-06 22:57:26
Share on

گوادر  / بلوچ لبریشن آرمی کے ترجمان آزاد بلوچ نے میڈیا میں بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ آج بروز ہفتہ شام 5 بجے گوادر کے ساحلی شہر جیونی کے علاقے پانوان میں گنز روڈ پر ہمارے سرمچاروں نے پاکستان نیوی کی خصوصی یونٹ Quick Reaction Force- QRF کی گاڑی پر جدید اور خودکار ہتھیاروں سے حملہ کیا جس کے نتیجے میں سہیل، رضا اور نعمان سمیت 4 اہلکار ہلاک جبکہ 2 اہلکار شدید زخمی ہوگئے۔

بی ایل اے کے سرمچاروں نے نیوی اہلکاروں کو اس وقت نشانہ بنایا جب وہ جیوانی سے گنز نیول بیس کی جانب جارہے تھے۔ اس حملے کی ذمہ داری ہماری تنظیم بلوچ لبریشن آرمی قبول کرتی ہے۔

بلوچ لبریشن آرمی کے ترجمان نے مزید کہا کہ ہم دنیا کو یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ ہم یہ صلاحیت رکھتے ہیں کہ پاکستانی افواج کو کہیں بھی کسی بھی وقت نشانہ بنائیں۔ پاکستان کی نیوی گوادر سمیت بلوچستان کے ساحل کو کالونائیز کرنے میں پیش پیش ہے جو کہ ناصرف چین کے ساتھ مل کر بلوچستان کے ساحلی علاقوں سے بلوچ عوام کو بے دخل کرکے بڑھے پیمانے پر ڈیموگرافک تبدیلی لانا چاہتی ہے بلکہ بحر بلوچ کے ساحل پر چین کے ساتھ مل کر نیول بیس تعمیر کررہی ہے۔ چونکہ پاکستان بلوچستان پر قابض ہے اور کوئی بھی قبضہ گیر ایک محکوم قوم کو ترقی نہیں دے سکتی۔

ہزاروں سالوں تک بحر بلوچ نے مکران کے ساحل پر آباد بلوچ ماہی گیروں کو ضروریات زندگی مہیا کیں اور آج بلوچستان کے فرزند اپنے ہی سمندر میں شکار کے لیے آزادی سے نہیں جاسکتے۔

آزاد بلوچ نے مزید کہا کہ ہم یہ بھی واضح کرتے ہیں کہ پاکستان نیوی کی جانب سے چند ہفتے قبل بلوچستان کے سمندر میں چھ روزہ بین الاقوامی جنگی مشقیں کرائی گئیں اور پاکستان کی قابض نیوی کی طرف سے یہ دعویٰ کیا گیا کہ بلوچستان کی جیو اسڑیٹجک محل وقوع کے ذریعے پاکستان دوسرے ممالک کے مفادات کا تحفظ کرسکتا ہے۔ عالمی طاقتوں اور خطے کی تمام اقوام کو یہ سمجھنا ہوگا کہ بلوچستان کے ساحل پر پاکستان کی اپنی نیوی ہمارے سرمچاروں کے حملوں سے محفوظ نہیں تو بلا وہ کس طرح کسی اور ملک کے مفادات کو مقبوضہ بلوچستان میں دوام بخش سکتا ہے؟

پاکستانی ریاست مختلف حربے استعمال کرکے گوادر سمیت سی پیک پروجیکٹ سے منسلک علاقوں میں مصنوعی حالات اور عام لوگوں کے لیے مشکلات پیدا کررہی ہے تاکہ بلوچ آبادی ایسے علاقوں سے نقل مکانی کرلیں۔ یہ تمام منصوبے بلوچستان کی آبادی کے تناسب کو تبدیل کرنے کی ریاستی سازش ہے جس کو ہم اپنی طاقت سے ناکام بنائیں گے۔ لہذا سی پیک سے تعلق رکھنے والے تمام پروجیکٹ ہمارے نشانے پر ہیں اور بین الاقوامی سرمایہ کار ایسے کسی بھی پروجیکٹ میں سرمایہ لگانے سے پرہیز کریں۔

آزاد بلوچ نے آخر میں کہا کہ ہمارے اس طرح کے حملے ایک آزاد اور خودمختار بلوچ ریاست کے قیام تک جاری رہیں گے۔

 

Share on
Previous article

بلکتا مغربی بلوچستان

LEAVE A REPLY